امام ذھبیؒ کی زبانی محدثین جو بعد میں حنفی مذہب پر منتقل ہوئے

سیر اعلام النبلاء سے ان محدیث کا تعارف امام ذھبیؒ کی زبانی جو محدثین بعد میں حنفی مذہب پر منتقل ہوئے

از قلم : اسد الطحاوی الحنفی البریلوی

ہم نے راویان کے ترجمہ میں اختصار کیا ہے سوائے اہم باتوں کے باقی حذف کیا ہے غیر ضروری تفصیل کو ۔۔

۱۔ پہلے امام عبد الخالق بن اسد دمشقی:

315 – عبد الخالق بن أسد بن ثابت أبو محمد الدمشقي *
الفقيه، الإمام، المحدث، المفتي، أبو محمد الدمشقي، الحنفي، الطرابلسي الأصل.
كان فقيها شافعيا، ثم تحول حنفيا، وتفقه على البلخي.
ورحل في الحديث، وصنف، وخرج، ودرس بالمعينية وبالصادرية ، ووعظ الناس، وكان يلقب تاج الدين
.

امام ذھبی انکا تعارف بیان کرتے ہوئے لکھتے ہیں :

فقیہ ، امام محدث اور صاحب فتویٰ ابو محمد دمشقی الحنفی طبرابلسی تھے
یہ مذہب شافعی کے فقیہ تھے لیکن پھر یہ حنفی مذہب کو اپنا لیا اور انہوں نے فقہ البلخی سے پڑھی

انہون نے حدیث و تدریس، میں لکھنے میں وقت صرف کیا اور اور عوام میں واعظ کرنے یہان تک کہ انکا لقب تاج الدین پڑ گیا

۲۔ امام الکندی ابو الیمن

28 – الكندي أبو اليمن زيد بن الحسن بن زيد *
الشيخ، الإمام، العلامة، المفتي، شيخ الحنفية، وشيخ العربية، وشيخ القراءات، ومسند الشام، تاج الدين، أبو اليمن زيد بن الحسن بن زيد بن الحسن بن زيد بن الحسن بن سعيد بن عصمة بن حمير الكندي، البغدادي، المقرئ، النحوي، اللغوي، الحنفي.

امام ذھبی انکا ترجمہ بیان کرتے ہوئے فرماتے ہیں :
شیخ امام علامہ صاحب فتویٰ اور احناف کے شیخ اور عرب کے شیخ اور قراءت کے شیخ
اور شام کے مسند کی حیثیت رکھنے والے تاج الدین ابو الیمن ابن عصمہ الکندی البغدادی نحوی و لغوی حنفی تھے
پھر آگے جاکر انکے مذہب کے بارے یوں رقم دراز ہوتے ہیں :

، وكان حنبليا، فانتقل حنفيا، وبرع في الفقه، وفي النحو، وأفتى، ودرس، وصنف، وله النظم، والنثر، وكان صحيح السماع، ثقة في نقله، ظريفا، كيسا، ذا دعابة وانطباع.

یہ حنبلی تھے پھر یہ حنفی مذہب کی طرف منتقل ہوئے ، اور یہ بہت عمد تھے فقہ ، نحو، فتویٰ دینے میں ، درس میں ، اور لکھنے میں
یہ صحیح السماع ثقہ تھے نقل کرنے میں ، ظریف اور صاحب اثر تھے

۳۔ امام ابن عیسی بن عبدالعزیز الشریشی

191 – ابن عيسى عيسى بن عبد العزيز الشريشي *
شيخ القراء بالإسكندرية، هو مطول في (طبقات القراء) ، الإمام، أبو القاسم عيسى ابن المحدث عبد العزيز بن عيسى بن عبد الواحد الشريشي.
مولده: بالثغر، سنة بضع وخمسين.
وسمع الكثير من: السلفي، وغيره.
وتلا على جماعة بالمتواتر والشاذ، وصنف في القراءات، وهو متهم ليس بثقة، وسماعه من السلفي صحيح، وأما في القراءات فكثير الدعاوي.
حدثنا عنه حسن سبط زيادة.
مات: سنة تسع وعشرين وست مائة

امام ذھبی انکے بارے فرماتے ہیں :
شیخ القراءت ، سکندریہ امام ابو القاسم عیسی بن محدث عبدالعزیز الشریشی ہیں
انہون نے امام سلفی سے بہت زیادہ سماع کیا ہے
اور یہ جماعت کے پر بہت زیادہ تلاوت کرتے انہوں نے قراءت کے بارے لکھا ہے ،
انکو تکذیب کی طرف منسوب کیا گیا ہے یہ ثقہ نہیں ہے
(یہ مذہب تبدیل کرنے کی وجہ سے ہوا اسکا رد آگے امام ذھبی کرینگے )
اور انکا سماع السلفی سے صحیح ہے
یہ قراءت کے امام تھے اور کثرت سے دعا کرتے تھے

امام ذھبی مذید فرماتے ہیں :

وسمع (الصحيح) من أبي الوقت، وسمع من: أبي زرعة المقدسي، وأبي علي أحمد بن الخراز، ومعمر بن الفاخر، وأبي الفتوح الطائي، وعدة.
وحدث بمكة في آخر عمره، وكان أولا حنبليا، ثم تحول شافعيا، ثم حنفيا، وكان من جلة الفقهاء، ذا دين وورع وبصر بالعربية.

انکا سماع صحیح ہے انکے والد کے دور میں اور ان میں بھی جن میں ابی زرعہ المقدسی ، ابی علی احمد الخزاز اور معمر بن الفاخر اور ابی فتوح الطائی اور کئیوں سے

اور انہوں نے آخری عمر میں کہ میں احادیث بیان کیں ، یہ پہلے حنبلی علماء میں سے تھے ، پھر یہ شافعی مذہب اپنا لیا اور پھر یہ حنفی مذہب پر پابند ہو گئے ،
یہ بہت اجلہ فقھا میں سے تھے ،
یہ اچھے دین والے ، اور عربی میں بہت عمدہ و اہل نظر والے تھے

قال ابن النجار: كان عالما، متدينا، حسن الطريقة، له معرفة بالنحو، كتب الكثير من التفاسير، والحديث، والتاريخ، وكانت أوقاته محفوظة.
قال ابن الحاجب: رأيتهم يرمونه بالاعتزال، فكتب تحته ابن المجد: قصر ابن الحاجب في وصف شيخنا هذا، فإنه كان إماما عالما، لم نر في المشايخ مثله إلا يسيرا.

امام ابن نجار نے کہا : یہ عالم تھے اور دیندار تھے ، اچھے طریقے والے تھے یہ اہل معرفت والے تھے نحو میں ، انکی کثیر کتب ہیں جن میں تفاسیر و حدیث ، تاریخ کی ہیں ،

ابن الحاجب نے کہا کہ میں نے دیکھا انکو نکال دیا گیا چناچہ ابن المجد نے لکھا کہ ابن حاجب نے انکا ترجمہ بہت چھوٹا کر دیا
یہ امام اور عالم تھے ہم نے اپنے مشائخ میں ان جیسا کوئی شازو ناظر ہی دیکھا

دعاگو: اسد الطحاوی الحنفی الب

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s